Tuesday, April 19, 2016

Manqabat Hazrat Abbas (a.s)

منقبتِ عبّاس علیہ السلام:

١.🌹بھائی کو کہے آقہ ایسا میرا مولا ہو
قمرے بنی ہاشم کا وہ چاند سا چہرہ ہو

٢.🌹مولا کی ولادت ہے تم سب کو مبارک ہو
اب قرض یہ محفل کا صلوات سے پورا ہو

٣.🌹یہ سوچ کے حیدر نے اللہ سے مانگا تھا
عبّاس شجاعت میں ہر گام پہ یکتا ہو

٤.🌹 ہو سکتی نہیں دوری شبّیر سے غازی کی
جس جگہ شجر ہوگا لازم ہے کے سایا ہو

٥.🌹آجائو ہریک مل کے اسلام کے دشمن تم
عبّاس کے نظرو سے گر نار میں جانا ہو

٦.🌹کیا حال ہوا ہوگا اس شخص کا جس نے بھی
صفین میں حیدر سا عبّاس کو دیکھا ہو

٧.🌹کیا صبر و شجاعت ہے بے مثل وفاداری
ممکن نہیں دنیا میں عبّاس سا پیدا ہو

٨.🌹کیا تم نے کبھی دیکھا ایسے بھی مجاہد کو
بن ہاتھو کے دشمن سے میدان میں جیتا ہو

٩.🌹عبّاس تیرے خط کو گر پار کوئی کر دے
سر تن سے جدا ہوگا پھر چاہے وہ جیسا ہو

١٠.🌹یہ فیض فقت پیاسے عبّاس کو حاصل ہے
دریا میں اتر آئے اور پانی سے مس نا ہو

١١.🌹تاعمر اطاعت کی عبّاس نے بھائی کی
قسمت میں ہماری بھی اس راہ پہ چلنا ہو

١٢.🌹معصوم صفت والا ہر چیز میں اعلی یے
کیو کر  نہ زمانے میں عبّاس کا چرچا ہو

١٣.🌹معلوم نہیں کب سے ارمان ہے ہم دم کا
ذیشان بھی محفل میں شعرا سے شناسا ہو

No comments:

Post a Comment

Your comments are appreciated and helpful. Please give your feedback in brief.