Friday, May 26, 2017

Rahmate rab ki hai pahchan hilale ramazan

Rahmate rab ki hai pahchan hilale ramazan

Phir huwa hum pe maherbaan hilaale ramazan
Yeh musalmano'n ki hai shaan hilale ramzan

Shaan o shaukat se yeh elaan hai bar auje falak
Rahmate rab ki hai pahchan hilale ramazan

Nafse ammara ko pamaal karega zeeshan
Momino'n ka hai dil o  jaan hilale ramzan

✍ Zeeshan Azmi

Saturday, May 20, 2017

Bala ke dasht me Asghar akela baat karta hai

Bala ke dasht me Asghar akela baat karta hai

Badan se sar juda ho Jaye to kya baat karta hai
Magar Shabbir chadh kar nouke naiza baat karta hai

Amire shaam ke darbaar me aandhi si aati hai
Jo sheh ki god me hyder ka pota baat karta hai

Sitam se taan kar seena ali asgar ke sadke me
Ali walo ke ghar ka bacha bacha baat karta hai

Saro ko peet kar rotey hain aadaa, jab tabassum se
Bala ke dasht me Asghar akela baat karta hai

Hamari mehfilo me aa nahi Sakta koi gaddar
Agar aa Jaye to zeeshan juta baat karta hai

✍ Zeeshan Azmi

Wednesday, May 17, 2017

Ay shio rab ke liye taa'ate imaam karo

Hadith e ahmade mukhtar par amal karlo
Kalam karne se pahle sabhi salaam karo

Zubaane band ho tableegh ho amal se faqat
Ay shio rab ke liye taa'ate imaam karo

✍ Zeeshan Azmi

Monday, May 15, 2017

Khoon-e-butalib hai shamil deen ki taameer me

Khoon-e-butalib hai shamil deen ki taameer me

Kya likha hai dekhiye quraan ke tafseer me
Hai Nabi ki parvarish Imran ke taqdeer me

Zakhm kya khate Muhammad (saw) sath jab imran ho
Itni Quwwat thi nahi dushman ke koyee teer me

Deen e Khaliq ki imaarat kah rahi hai aaj bhi
Khoon-e-butalib hai shamil deen ki taameer me

Qatl kya karte Nabi ko baa khabar dushman the sab
Zulfeqaari dhar hai imran ke shamsheer me

Manqabat padh kar pata chal jayega ay Momino'n
Kya sadaqat hoti hai Zeeshan ke tazkeer me

✍ Zeeshan Azmi

Sunday, May 14, 2017

Yeh sadaqat hai ke tohmat barmala Abbas par

Yeh sadaqat hai ke tohmat barmala Abbas par

Hai fida alfaaz jaane fatimah Abbas par
Naaz karti hai wafa bhi ba wafa Abbas par

Shaayer e batil jo kahte hai wafao ka khuda
Yeh sadaqat hai ke tohmat barmala Abbas par

Alqama se khaime tak paani na pohcha saka jari
Kitna mushkil haaye guzra marhala Abbas par

Karbala ke baad zahir hogaya yeh raaz bhi
Zeb deta hai bahot isme wafa Abbas par

Dekhti duniya yeh manzar, izn sheh dete agar
Aik bhi hamla na karta ba khuda Abbas par

Aakhari dam tak uthaya parcham e islam ko
Kiyo na ho qurban phir dee'n ka lewa Abbas par

Baazo-e-shabbir hai aur Bibi Zainab ki rida
Kyo'n na aakhir muftakhir ho'n sayyeda Abbas par

Jaa'n fida karne ko maula shah par tayyar hai
Kiyo na ho Zeeshan har lamha fida Abbas par

✍ Zeeshan Azmi

*نصیری کا خدا… موذی و قبیح لقب*
پیغمبر نوگانوی
لغت میں لقب اُس نام کو کہتے ہیں جو مدح یا مذمت پر دلالت کرتاہے ، جو افراد اپنے کردار میں پست ہوتے ہیں عموماً اُن کے لقب اُن کی پستی اور مذمت کو بیان کرتے ہیں ، اور شرفاء اور بافضیلت لوگوں کے لقب اُن کی مدح و فضیلت کو بیان  کرتے ہیں ، ائمہ معصومین (ع) کے بھی مدحیہ القاب موجود ہیں جن سے  اُن کی بزرگی، شرافت ، فضیلت اور احترام ظاہر ہوتا ہے ، اگر معصوم (ع) کے لئے کوئی لقب وضع کیا جاتا ہے تو وہ نہایت مناسب اور فضیلت و کمالات کو بیان کرنے والا ہوتا ہے ، جس میں کوئی نہ کوئی تاریخی کرامت و فضیلت بھی پوشیدہ ہوتی ہے ،لیکن افسوس! ہمارے یہاں بعض لوگوں نے امام اول کے لئے ایک ایسا لقب ایجاد کیا ہے جو نہایت غیر مناسب ، غیر محترم، قبیح اور امام (ع) کو اذیت پہنچانے والا ہے اور وہ ہے امام علی (ع)کو *’’ نصیری کا خدا ‘‘* کہنا ، اگر چہ یہ لقب فرطِ محبت میں ایجادکیا گیا ہے ،لیکن ہے موذی! اس لقب کو وضع کرنے والے اس بات سے بے خبر ہیں کہ یہ لقب امام (ع) کو اذیت پہنچاتا ہے ورنہ بھلا کون شیعہ ایسا ہوگا جو عمداً ایسا کام کرے جس سے اُس کے امام کو تکلیف پہنچتی ہو ! اسی بے خبری کے عالم میں  ہمارے بعض خطیب اور شعرا ٔنے منفور نصیریوں کو *’’محب علی (ع) کے آئیڈیل‘‘* کے طور پر پیش کردیا ، جبکہ شیعیت کو نقصان پہنچانے والے گروہوں میں نصیریت سر فہرست ہے، وہ گروہ جو شیعیت کے اعلانیہ دشمن ہیں اُن سے دفاع بہت آسان ہے ،لیکن یہ  دشمن گروہ (نصیری) ، جو محبت علی (ع) کا چولا پہن کر عوام کو دھوکہ دیتا ہے اِس سے مقابلہ  بہت مشکل کام  ہے۔
  ہمارے یہاں یہ سمجھا جاتا ہے  کہ نصیری گروہ ،امام علی (ع) کے زمانہ میں رونما ہوا اور یہ لوگ امام علی (ع) کو خدا کہنے لگے تھے ، جب کہ تاریخی حقیقت اس کے برخلاف ہے ،اگر ایسا ہوتا تو بنی امیہ اس گروہ کو ہاتھوں ہاتھ لے لیتے اور خوب حمایت کرتے اوراسی طرح سیاسی فائدہ اٹھاتے جس طر ح مرجئہ فرقہ کی حمایت سے فائدہ اٹھایا، لیکن کوئی واقعہ اس طرح کا تاریخ کے دامن میں موجود نہیں ہے …تاریخی شواہد اس بات پر دلالت کرتے ہیںکہ نصیریوں کا گروہ امام علی (ع) کے زمانہ میں نہیں بلکہ نویں امام محمد تقی (ع) کے زمانے میں رونما ہوا ، نصیری گروہ کا موجد محمد بن نصیر نمیری (وفات 270ھ) تھا ، اس نے اپنے ارد گرد کچھ افراد اکٹھا کرلئے تھے جو نصیری کہلائے اور یہ لوگ محمد بن نصیر کی رسالت کے قائل ہوگئے اور یہ بھی دعویٰ کرنے لگے کہ محمد بن نصیر نبی و رسول ہے اور اس کو امام محمد تقی (ع) نے رسالت بخشی ہے اور اس طرح یہ گروہ امام محمد تقی علیہ السلام کو خدا ماننے لگا ، امیرالمومنین امام علی(ع) کے بارے میں بھی یہ گروہ تناسخ کا قائل تھا اورغلو کرتا تھا اوراس بات کا بھی دعویٰ کرتا تھا کہ امیرالمومنین علی (ع) میں ربوبیت پائی جاتی ہے ۔ (رجال کشی ، صفحہ 521,نمبر 1000)
محمد بن نصیر کے زندیق اور فاسق ہونے پر کیا اس سے بھی صریحی کوئی گواہی ہو سکتی ہے؟ نہیں ! بات یہیں پر تمام نہیں ہوتی ہے بلکہ اس سے بھی بڑھ کر یہ کہ :محمد بن نصیر ،محارم (ماں ، بہن، پھوپھی وغیرہ) سے شادی کو جائز سمجھتا تھا ، ہم جنس پرستی کا قائل تھا یعنی مرد سے مرد کی شادی کو جائز جانتا تھا، وہ یہ بھی کہتا تھاکہ لذت میں فاعل و مفعول ایک ہی ہیں اور خدا نے ان میں سے کسی ایک کو بھی حرام قرار نہیں دیا ہے۔ (رجال کشی ، صفحہ 521,نمبر 1000)
اس سے بھی بڑھ کریہ کہ محمد بن نصیراغلام بازی کو جائز سمجھتا تھا ، محمد بن موسیٰ بن حسن بن فرات کہتا ہے کہ بعض لوگوں نے محمد بن نصیر کو علی الاعلان اغلام بازی کی کیفیت میں دیکھا ، اس کے غلام نے اس فعل سے انکار کیا تو اس نے یہ نظریہ قائم کیا کہ یہ لذتوں میں سے ایک ہے ! یہ در حقیقت خدا کے سامنے سر تسلیم خم کرنا ہے اور جبر کو ختم کرنا ہے (رجال کشی ، صفحہ 521,نمبر 1000)
بنی امیہ کے زمانہ میں یزید ایسے ہی پلیدافعال انجام دیتا تھا ، جس کے خلاف نواسۂ رسول نے قیام فرمایا اور اپنی قیمتی قربانیاں دین کی راہ میں پیش کردیں ، جس کی یاد ہم ہر سال محرم میں برپا کرتے ہیں ، اب اگر انہی عقائد کا اظہار محمد بن نصیر نے کیا تو وہ یا اس کے پیروکار کس طرح قابل تذکرہ ہوگئے ؟! اور معصوم علی (ع) کو اِن زندیقوں سے نسبت کیوں دی جانے لگی؟ کیا امام علی (ع) اِن زندیقوں اور ملحدوں کا خدا کہے جانے پر خوش ہوں گے ؟ نہیں ! ہر گز نہیں،اور امام المتقین کو زندیقوں اور فاسقوں کا خدا کہنے میں کونسی اتنی بڑی فضیلت ہے؟ کیا کوئی شیعہ یہ گوارہ کرے گا کہ یزید کے پیروکاروں کی تعریف کرے؟ نہیں ! تو پھر نصیری ایسے ہی تو ہیں جیسے یزید کے پیروکار تھے ، نصیریوں کی تعریف کیوں بیان کی جاتی ہے ؟
جس طرح ائمہ اورعلماء اور تمام مسلمان یزید پر لعنت کرتے ہیں اسی طرح محمد بن نصیر پر ائمہ نے لعنت کی ہے اور اپنے شیعوں کو بھی حکم دیا ہے کہ وہ اس پر لعنت کریں ،نصر بن صباح کہتے ہیں کہ: حسن بن محمد معروف بابن بابا، محمد بن نصیر نمیری، فارس بن حاتم قزوینی، ان تینوں پر امام علی نقی(ع) نے لعنت بھیجی ہے (رجال کشی ، صفحہ 521,نمبر 999)
سعد کہتے ہیں کہ مجھ سے عبیدی نے بیان کیا کہ امام علی نقی (ع) نے ابتدائے دور میں میرے پاس ایک خط لکھا جس میں امام نے تحریر فرمایاکہ: میں فہری ، حسن بن محمد معروف بابن بابا قمی ان دونوں سے اظہارِ برائت کرتا ہوں ، لہٰذا تم بھی ان دونوں سے بیزار ہوجاؤ ، میں تم کو اور اپنے چاہنے والوں کو ان دونوں سے خبردار کرتا ہوں ، ان دونوں پر اللہ کی لعنت ہو ، یہ ہمارے نام پر لوگوں سے کھا رہے ہیں ، یہ دونوں اذیت دینے والے اور فتنہ پرور ہیں ، خدا ان دونوں کو اذیت دے، خدا ان دونوں کو فتنہ کی رسّی میں جکڑ دے ، ابن بابا (قمی) یہ خیال کرتا ہے کہ میں نے اس کو نبوت دی ہے اور وہ رئیس ہے اس پر خدا کی لعنت ہو ، شیطان نے اس کو مسخر کرکے اس کا اغوا کرلیا ہے ، اس پر بھی خدا کی لعنت ہوجو ان کی باتوں کو قبول کرے ۔
اے محمد ! اگر تم اس بات پر قدرت رکھتے ہو کہ پتھر سے اس کا سر کچل دو تو ایسا کر گزرو کیونکہ اس نے مجھ کواذیت دی ہے ، خدا اس کو دنیا و آخرت میں اذیت دے ، (رجال کشی ، صفحہ 521,نمبر 999)
امام (ع) کے اس خط سے معلوم ہوتا ہے کہ شیعوں کو اس بات کا خاص خیال رکھنا چاہئے کہ اہل بیت (ع) کی تعریف کرنے والا ہر شخص ناجی نہیں ہو سکتا بلکہ پہلے عقیدہ توحید و رسالت مستحکم اور پاک و پاکیزہ ہونا چاہئے اس کے بعد ہی مولا کی محبت فائدہ پہنچا سکتی ہے ، یعنی علی (ع) سے محبت رکھنے کی بنیاد توحید و رسالت کا صحیح عقیدہ ہے ،اُس ظرف میں علی ؑکی محبت رہ ہی نہیں سکتی جو توحیدر اور رسالت کے عقیدے سے خالی ہو، جتنا عقیدہ ٔ توحید و رسالت مضبوط ہوگااتنا ہی انسان غلو سے محفوظ رہے گا ، غلو کا شکار وہی ہوتے ہیں جن کا عقیدۂ توحیدکمزور ہوتا ہے اور دلیل کے ذریعہ توحید خداوندی کو سمجھنے سے قاصر رہتے ہیں ، تمام انبیاء کی بعثت اور ائمہ (ع) کی امامت کا مقصد خدا وند عالم کی توحید کا استحکام ہے ، انبیاء اور ائمہ (ع) نے جتنی بھی تکلیفیں اور مصائب برداشت کئے ہیں وہ صرف توحید خداوندی کی بقا کی خاطر ہے ، جوبھی راسخ العقیدہ موحد و مومن ہوگا وہ اسی طرح غلو اور غالیوں منجملہ نصیریوں سے نفرت کرے گا جس طرح ائمہ معصومین (ع) نے کی ہے ، نصیریوں کے تئیں دل میں نرم گوشہ رکھنا یقینا عقیدۂ توحید میں کھوٹ کی علامت ہے ، لہٰذااگر ذرہ برابر بھی عقیدہ توحید و رسالت سست ہوجائے تو پھر وہی ہوتا ہے جو ہم آج دیکھ رہے ہیں کہ  مدح اہل بیت (ع) کرتے وقت مزاج امامت کا خیال نہیں رکھاجاتا ، نصیریوں اور غالیوں سے امام معصوم (ع) کی اتنی سخت نفرین کے باوجود اپنے اشعار میں نصیریوں کا مدحیہ انداز میں تذکرہ کرنا اوران کے ذریعہ مولاکی مدح کرنا امام علیہ السلام کو کتنا رنجیدہ کرتا ہوگا ؟! جب امام ، نصیریوں سے ناراض ہیں تو پھر ہم کون ہوتے ہیں نصیریوں کو شاباشی دینے والے اور بالفرض اگر نصیریوں کا مولا کو رب سمجھنا اتنی بڑی فضیلت ہوتی تو کیا امام علی نقی (ع) و دیگر ائمہ (ع) اس فضیلت کو نہیں سمجھتے تھے ، کیا شاعر،امام علی نقی (ع) سے زیادہ امام علی (ع) سے محبت کرتے ہیں ؟ ایسا نہیں ہوسکتا ! محب اور شیعہ وہی کہلائے گا جو امام کو ناراض نہ کرے ، اور یہاں امام نے اتنی وضاحت سے نصیریوں سے اپنی ناراضگی اور نفرین کا اعلان کیا ہے اور اپنے شیعوں کو نصیریوں پر تبرے کا حکم دیا ہے لیکن پھر بھی بعض خطیب اور شاعر نصیریوں کا تذکرہ ضرور کرتے ہیں ، ایسے شاعروں اور خطیبوں کے اس عمل سے امام علی نقی (ع) کتنا ناراض ہوتے ہوں گے ؟ جو جتنا بڑا تبرائی ہوگا وہ حکم امام کے مطابق اتنا ہی نصیریوں پر تبرا کرے گااوران سے نفرت کرے گا ، نہ یہ کہ انہیں اپنے مدحیہ کلام میں ہیرو کے طور پر پیش کرے اوراپنے معصوم و مہربان امام (ع) کو’’نصیری کا خدا‘‘ کہہ کر ناراض کرے ! ایسا لقب اگر ہم اپنے سماج میں کسی انسان کو دیں جس سے اُس کو اذیت پہنچتی ہو تو اسلام نے منع کیا ہے ، قرآن مجیدکے سورہ حجرات کی گیارہویں آیت میں سختی سے روکا گیا ہے ، جب عام انسانوں کے لئے برے القاب سے یاد نہ کرنے کی قرآن مجید کی یہ تاکید ہے تو پھر مولائے کائنات ! جن کے فضائل قرآن کریم میں جا بجا موجود ہیں اور جن کی عظمتیں بے شمار ہیں ، ہم انہیں ایک قبیح اور موذی لقب *’’ نصیری کا خدا‘‘* سے کیوں یاد کرتے ہیں ؟
، ہماری جرأتیں دیکھئے ! جس گروہ کے بارے میں ائمہ (ع) اپنے غضب کا اظہار فرمائیں اسی کو ہم لائق تذکرہ سمجھیں اور اسی سے اپنے معصوم(ع) امام کو نسبت دیں !؟ جبکہ امام علیہ السلام *’’ خدا کا بندہ ‘‘* ہونے پر فخر کرتے ہیں اور اس بندگی کو اپنی عزت کے لئے کافی سمجھتے ہیں ۔
یاد رکھیئے ! نصیریوں کے تذکرے اور ان سے نسبت دینے پر امام معصوم (ع) رنجیدہ ہوتے ہیں ، اور کوئی بھی شیعہ یہ ہرگز نہیں چاہے گا کہ اپنے امام کو رنجیدہ کرے ،لہٰذا ہمیں چاہئے کہ اپنے امام کو  ناراض نہ ہونے دیں اور  اپنی نظموں اور نثر میں نصیریوں کے تذکرے اور اس موذی لقب سے پرہیز کریں  کیونکہ نصیریوں سے ائمہ نفرت کرتے ہیں اور یہ شیعیت کے دشمن ہیں ۔

Saturday, May 13, 2017

Rah ke bhi ghaibat me wo sab ki khabar rakhte hain

Aale Muhammad(saw) se ulfat hum agar rakhte hain
Dushman ki har chaal par puri nazar rahte hain

Bekhauf mimber se jo haq baat byaa'n karte hain
Dar zikr Quraa'n ki ayat ka asar rakhte hai

Maula ko jo Khaliqo Raziq kaha karte hain
Wo sab yaqeenan saqeefa jaisa ghar rakhte hain

Har qaul ko maula ke hum to suna karte hain
Aqwaale Mehdi(as), hidayat ka samar rakhte hain

Rahbar kisi qaum ka batlaao kya zinda hai
Yeh Dawa Shia faqat shaamo sahar rakhte hain

Hinda ki aulaado ko yeh baat batlaao tum
Awwal se Mehdi bhi Hyder sa jigar rakhte hain

Khaliq ne aisi nazar, de rakhkhi hai Mehdi ko
Rah ke bhi ghaibat me wo sab ki khabar rakhte hain

Ashaar e Fanoos e shar,  ab bol na payega
Zeeshan bhi likhne ka achcha hunar rakhte hain

✍ Zeeshan Azmi

Haye mere paas to ek lafz kahne ko nahi

Ghazal

Kya juda hum se tu sola saal rahne ko nahi
Jab talak batein na ho apni tu jeene ko nahi

Thi mohabbat tum ko humse, isliye dhoonda mujhe
Fb par darkhaast bheji dil lobhane ko nahi

Tum huwee naaraz pahli baar narraz yu
Jaa nikal ne ko hai par tu baat karne no nahi

Juliet ke role ko aisa kiya tum ne ada
Haye mere paas to ek lafz kahne ko nahi

Ab bayaa kaise karo mai haale dil zeeshan ka
Uski yaadein saath hai wo Bhool jaane ko nahi

✍ Zeeshan Azmi

Quraan kar raha hai tilawat hussain

1.Rag Rag Me Bas Gayee Hai Haraarat Hussain (As) Ki
Ghar Kar Gayee Hai Dil Me Muhabbat Hussain (As) Ki

2.Ek noor Aasmaan se utra Ali ke ghar
Takmeel-e-panjatan hai wiladat hussain ki

3.Dekha Jo Kainat Me Manzar Azeeb Tha
Mushrik Bhi Kar Raha Hai Ibadat Hussain (As) Ki

4.Zakir kalame afzalo mafzool ke siwa
mazkoor kar bayan me azmat hussain ki

5.Qudrat me hai shareek bahut sunte hai magar
milti kaha hai aisi kahawat hussain ki

6.Rakh paak rizs o shirk se majlis ko paak tu
hai deen tere paas amanat hussain ki

7.bahtareen amal ibadat-e-parwardigar hai
Aawaaz de rahi hai muwaddat hussain ki

8.jeene ka taur sab ko sikhane ke wasate
duniya ko aaj bhi hai zaroorat hussain ki

9.zillat se bahtareen to izzat ki maut hai
elaan kar rahi hai sadaqat hussain ki

10.ek dopaher me waday-e-tifli ada kiya
Allah tere liye thi chahat hussain ki

11.islaam bach gaya hai hamesha ke wasate
wo kaam kar gayee hai shahadat hussain ki

12.wada khuda ne is ka kiya hai butool se
bazm-e-aza rahegi salamat hussain ki

13.is baat ki gawah hai tareekh-e-karbala
dekha hai dushmano ne shuza'at hussain ki

14.jannat ki boo wo sungh le, uthta nahi sawal
jin ke dilo me hogi adawat hussain ki

15.raazi khuda hai tujhse to raazi khuda se ho
Quraan kar raha hai tilawat hussain

16.dil me basaye kab se hai Zeeshan aarzoo
duniya me ho naseeb ziyarat hussain ki

✍ Zeeshan Azmi

Nabi Ki God Me Aaye Ali Mubarak Ho.

1.Huwa Hai Chand Rajab Ka Nabi Mubarak Ho
Haram Me Paida Huwa Hai Wasi Mubarak Ho

2.Hamare Paas To Quraan O Aale Ahmed Hai
Tumhe Andhera Hame Roshani Mubarak Ho

3.Farishte Bol Uthe Marhaba Abu Talib
Nabi Ki God Me Aaye Ali Mubarak Ho.

4.Ali Hamara Ali Hai Tera Khuda Hoga
Nuseri Tujhko Teri Bandagi Mubarak Ho

5.Haram Me Paida Huwa Koi Aur Na Ab Hoga
Faqat Ali Ko Hai Yeh Bartari Mubarak Ho

6.Ajeeb Shaks Ho, Kya Tum Gadeer Bhool Gaye
Ali Se Tum Ne Kaha Tha Ali Mubarak Ho

7.Rasool Kar Gaye Hijrat,Ye Shaan Hyder Hi
Samjhte Ra Gaye Dushman Nabi, Mubarak Ho

8.Wo Aa Gaya Hai Haram Me, The Muntazir Jiske
Butool Ke Liye Dulhaa Nabi Mubarak Ho

9.Amal Jo Qaule Ali Par Muheeb Karta Hai
Use Hi Aaj Wilaaye Ali Mubarak Ho

10.Ali Ki Haashiya Aaraaee Tera Shewa Hai
Yeh Shewa Tujhko Hi Ay Muftari Mubarak Ho

11.Buto'N Ko Tod Diya Ghar Khuda Ka Paak Huwa
Nabi Ka Kaandha Tumhe Ya Ali Mubarak Ho

12.Ali Ke Naam Pe Qurbaan Hona Chahti Hai
Tujhe Yeh Hausla Ay Zindagi Mubarak Ho

13.Ali Ki Yaad Me Jo Log Doobe Rahte Hai
Meri Taraf Se Unhe Bekhudi Mubarak Ho

14.Tujhe Ay Shaayere Zeeshan Bar Binay E Khuloos
Sanay E Murtuza Me Shayeri Mubarak Ho

✍ Zeeshan Azmi

Husne Yusuf Aur Husne Mujtaba Kuch Aur Hai


Sham Ke Hakim Pe Chaya Dabdaba Kuch Aur Hai
Bil Yaqee'N Maula Hasan Ka Martaba Kuch Aur Hai

Kahte Hain Ashaar Mujh Se, Madha Kar Tu Ye Soch Kar
Shayeri Aur Madhe Ibne Murtuza Kuch Aur Hai

Rahte Hai Abid, Sanagustar, Tabbaraee Alag
Kya Musalmano Ka Seedha Raasta Kuch Aur Hai

Raat Din Barkat Se Pur Hai Maah Yeh Ramadhan Ka
Mere Maula Ki Wiladat Ka Sama Kuch Aur Hai

Shaam Ke Darbaar Me Be Kauf Maula Ke Qadam
De Gaye Paigaam: Haq Ka Za-Eqa Kuch Aur Hai

Sulhe Shabbar Hai Tamacha Zulm Ke Rukhsaar Par
Dekh Le Duniya Yeh Bhi Ek Maaraka Kuch Aur Hai

Kya Taqabul Ki Ijazat Mil Gayee Ke Hum Kahe
Husne Yusuf Aur Husne Mujtaba Kuch Aur Hai

Bech Mat Zeeshan Kam Qeemat Par Tu Hargiz Ise
Aakarat Me Yeh Qaseede Ka Sila Kuch Aur Hai

✍ Zeeshan Azmi

Friday, May 12, 2017

raza (as) me muhammad (saw) ki kul khubiyaa hai

1.falak se utarta huwa karawaa hai
ke manjil ki janib jhuka aasamaa hai

2.saji arsh par hai, sitaro ki mahfil
teri madah karti chali kahkashaa hai

3.baharo ka mausam nazar aarahaa hai
gulo me sa'adat ka wahid samaa hai

4.Ali ibne musa ki aamad se pahle
muattar zamin hai mahakta zamaa hai

5.wiladat mubarak sabi momeno ko
imamat ka aayaa qamar aathwaa hai

6.basar zindagi kar muhabbat me aise
mare to musalmaa jiye to jaha hai

7.Ada shukr karta hu khaliq ka apne
mere dil me ishqe ali jawedaa hai

8.Ali ki nasihat khuda ki wo aayat
tu mahfil me majlis me sunta kaha hai

9.namazo me bidat ko ane na dega
ke baqi abhi deen ka paasbaa hai

10.dua me raza ko wasila banao
rasai nahi gar khuda ke yaha hai

11.tere qaul me hai fsahat balagat
razaye khuda ke liye har bayan hai

12.rakha bugz jisne bhi wo na tawa hai
raza ki muhabbat me peeri zawan hai

13.ziyarat hamari yeh karti aya hai
raza ki bhi turbat hamari jena hai

14.kahani nahi hai na yeh dasataa hai
ziyarat ka mushtaaq hindustaan hai

15.Qasidey me apne bayaa haq karo tum
yahi haqqe mehfil yahi nekiyaa hai

16.Azabe ilahi ko tu bhool baitha
zubaa par tere chugliyaa gaaliya hai

17.shuja'at,sakhawat,qana'at to dekho
raza me muhammad saw ki kul khubiyaa hai

18.wahabi ka iljaam zeeshan ke sar
lagaya hai jisne wo gandi zubaa hai

✍ Zeeshan Azmi

Thursday, May 11, 2017

Nahi ho Aap toh kaabah bhi kaabah ho nahi sakta

Nahi ho Aap toh kaabah bhi kaabah ho nahi sakta

Zamane me kahi aisa khalifa ho nahi sakta
Koi insaa'n imam e asr (atfs) jaisa ho nahi sakta

Hazaro'n muntakhab karlein kisi ko janashee'n apna
Magar woh naam ka hoga woh maula ho nahi sakta

Ali ki dil me ulfat hai isi baa'es me padhta hoon
Kahi Nahjul balagha jaisa khutba ho nahi sakta

Imaam e asr ki sarkar me islaam hi hoga
Kisi mazhab ka bhi us waqt ghalba ho nahi sakta

Ay Maulood e haram ke shahzaade dil yeh kehta hai
Nahi ho aap to kaabah bhi kaabah ho nahi sakta

Wilayat ka tere ustaad me zeeshan hai jaisa
Hazaaro'n dil me dhondo par woh jazba ho nahi sakta

✍ Zeeshan Azmi
11th May 2017
Neema e Shaban
Shab e barat

*نہیں ہیں آپ تو کعبہ بھی کعبہ ہو نہیں سکتا*

زمانہ میں کہیں ایسا خلیفہ ہو نہیں سکتا
کوئی انساں امام عصر جیسا ہو نہیں سکتا

ہزاروں منتخب کر لیں کسی کو جانشیں اپنا
مگر وہ نام کا ہوگا وہ مولا ہو نہیں سکتا

علی کی دل میں الفت ہے اسی باعث میں پڑھتا ہوں
کہیں نہج البلاغہ جیسا خطبہ ہو نہیں سکتا

امام عصر کی سرکار میں اسلام ہی ہوگا
کسی مذھب کا بھی اس وقت غلبہ ہو نہیں سکتا

اے مولود حرم کے شاہ زادہ دل یہ کہتا ہے
نہیں ہیں آپ تو کعبہ بھی کعبہ ہو نہیں سکتا

ولایت کا تیرے استاد میں ذیشان ہے جیسا
ہزاروں دل میں ڈھونڈھو پر وہ جذبہ ہو نہیں سکتا

✍ ذیشان آعظمی

Gule Narjis ki khushbu me Zamana doob jayega

*Gule Narjis ki khushbu me Zamana doob jayega*

1. Wiladat Mehdi(as) ki hai, har Nazara doob jayega
Ho koi Chaudhawi ke chand jaisa doob jayega

2. Mahak hai pandarah sha'baan ki dono jahano me
Khushi me aap ki mudhat ki rauza doob jayega

3. Hadis e Mahdawi padh lo isi nayab gauhar me
Hamare zahn ka batil aqeeda doob jayega

4. Tilawat jaa nahi hori kabhi quran ki kuch bhi
Imaam aayenge jab bhi wo thikana doob jayega

5. Mere Maula ke aane par haqeeqat saamane hogi
Padha hai mulla ne jitna fasana doob jayega

6. Nabi ka chahe beta ho, pahadi par chadhe chahe
Bahaa qahre khuda to wo bechara doob jayega

7. Zara aane to dijiye fizaaye zulmate shar me
Gule Narjis ki khushboo me zamana doob jayega

8. Agar aamaal se apne imaam e asr rukh pherey
Hamara chullu bhar paani me chahra doob jayega

9. Khuda ke noor tak yeh to ba shakle noor jayega
Yeh na samjho samandar me areeza doob jayega

10. Banaye jitne honge zulm se Zeeshan zalim ne
Adalat ke samadar me wo khana doob jayega

✍ Zeeshan Azmi
11th May 2017

*گل نرجس کی خوشبو میں زمانہ ڈوب جائیگا*

1. ولادت مہدی (ع) کی ہے ہر نظارہ ڈوب جائیگا
ہو کوئی چودھویں کے چاند جیسا ڈوب جائیگا

2. مہک ہے پندرہ شعبان کی دونوں جہانوں میں
خوشی میں آپ کی مدحت کی روضہ ڈوب جائیگا

3. حدیثِ مہدوی پڑھ لو اسی نایاب گوہر میں
ہمارے ذہن کا باطل عقیدہ ڈوب جائیگا

4. تلاوت جا نہیں ہوتی کبھی قرآن کی کچھ بھی
امام آئیں گے جب بھی وہ ٹھکانہ ڈوب جائیگا

5. میرے مولا کے آنے پر حقیقت سامنے ہوگی
پڑھا ہے مُلّا نے جتنا فسانہ ڈوب جائیگا

6. نبی کا چاہے بیٹا ہو پہاڑی پر چڑھے چاہے
بہا قہرِ خدا تو وہ بچارہ ڈوب جائیگا

7. ذرا آنے تو دیجیئے فضائے ظلمتِ شر میں
گل نرجس کی خوشبو میں زمانہ ڈوب جائیگا

8. اگر اعمال سے اپنے امام عصر رخ پھیرے
ہمارا چلو بھر پانی میں چہرہ ڈوب جائیگا

9. خدا کے نور تک یہ تو بہ شکل نور جائیگا
یہ نا سمجھو سمندر میں عریضہ ڈوب جائیگا

10.  بنائے جتنے ہونگے ظلم سے ذیشان ظالم نے
عدالت کے سمندر میں وہ خانہ ڈوب جائیگا

✍ ذیشان آعظمی
١١ مئی ٢٠١٧

Monday, May 8, 2017

Kisi surat imaam e asr ka deedaar ho jaye

Kisi surat imaam e asr ka deedaar ho jaye

1. Khudaya nusrate dee'n ke liye tayyar ho jaye
Ali walo ka har bachcha sepah salaar ho jaye

2. Hamari qaum ka har ek jawa'n, Akbar ke sadqe me
Jehad e nafs karke saheb e kirdaar ho jaye

3. Sikhayein apne bachche ko jehad e asghari aisi
Agar wo muskrayein, dushmano'n ki haar ho jaye

4. Khuda paida karega saheb e imaan ko aakhir
Agar imaan wala murtad o ghaddar ho jaye

5. Naye qanoon bante hai har ek par zulm hote hai
Khuda jaldi imaam e asr ki sarkaar ho jaye 

6. Dua Karta hai maula aap ki aamad par har zarra
Hai jitna Dushmano'n ka aslaha bekaar ho jaye

7. Fiza na paak hai dee'n ki, khudara aap aajaayein
Baharein qaum mein aayein sama gulzaar ho jaye

8. Ziyarat ke liye kab se nazar betaab hai meri
Kisi surat imaam e asr ka deedaar ho jaye

9. Sipahi lashkare Mehdi ka hoon majboor mat karna
Qalam Zeeshan ka uththe to phir talwaar ho jaye

✍ Zeeshan Azmi
8th May 2017


*کسی صورت امام عصر کا دیدار ہو جائے*

1. خدایا نصرتِ دیں کے لئے تیار ہو جائے
علی والوں کا ہر بچہ سپہ سالار ہو جائے

2. ہماری قوم کا ہر اک جواں اکبر کے صدقہ میں
جہادِ نفس کرکے صاحبِ کردار ہو جائے

3. سکھائیں اپنے بچہ کو جہادِ اصغری ایسے
اگر وہ مسکرائے دشمنوں کی ہار ہو جائے

4. خدا پیدا کریگا صاحب ایمان کو آخِر
اگر ایمان والا مرتد و غدّار ہو جائے

5. نئے قانون بنتے ہے ہر اک پر ظلم ہوتے ہے
خدا جلدی امامِ عصر کی سرکار ہو جائے

6. دعا کرتا ہے مولا آپ کی آمد پر ہر ذرّہ
ہے جتنا دشمنوں کا اسلحہ بیکار ہو جائے

7. فضا نا پاک ہے دیں کی خدارا آپ آجائیں
بہاریں قوم میں آئیں سما گلزار ہو جائے

8.زیارت کے لئے کب سے نظر بے تاب ہے میری
کسی صورت امام عصر کا دیدار ہو جائے

9. سپاہی لشکرِ مہدی کا ہوں مجبور مت کرنا
قلم ذیشان کا اٹّھے تو پھر تلوار ہو جائے

✍ ذیشان آعظمی

Monday, May 1, 2017

Kar gaye islam ko aabaad zainul aabideen

Kar gaye islam ko aabaad zainul aabideen

Kya balaghat kya fasahat aap ke khutbe me hain

Sunke Mursal hogaye hain shaad zainul aabidee'n

Haqq bayaa'n karkey ameer e Sham ke darbar me

Kar gaye islam ko aabaad zainul aabidee'n

✍ Zeeshan Azmi

ہمیں خیالی پلندا پسند آتا نہیں

ہمیں خیالی پلندا پسند آتا نہیں

ہٹا دے راہ سے جس کو وہ راہ پاتا نہیں
شریر قوم کو رستہ خدا دکھاتا نہیں

امام حق کی ولادت پہ شعر و شاعری کا
چڑھا ہے ایسا نشا کہ پلٹ کے جاتا نہیں

بتا امام کے اقوال کچھ ولادت پر
ہمیں خیالی پلندا پسند آتا نہیں

کلام حق کو زمانہ اگر بھولاتا نہیں
حسین نیزے پہ قرآن کو سناتا نہیں

کتاب حق کو ذرا بھی سمجھتے اہل نظر
نظر سے اپنوں کی ذیشان زخم کھاتا نہیں

✍ ذیشان آعظمی