Monday, May 1, 2017

ہمیں خیالی پلندا پسند آتا نہیں

ہمیں خیالی پلندا پسند آتا نہیں

ہٹا دے راہ سے جس کو وہ راہ پاتا نہیں
شریر قوم کو رستہ خدا دکھاتا نہیں

امام حق کی ولادت پہ شعر و شاعری کا
چڑھا ہے ایسا نشا کہ پلٹ کے جاتا نہیں

بتا امام کے اقوال کچھ ولادت پر
ہمیں خیالی پلندا پسند آتا نہیں

کلام حق کو زمانہ اگر بھولاتا نہیں
حسین نیزے پہ قرآن کو سناتا نہیں

کتاب حق کو ذرا بھی سمجھتے اہل نظر
نظر سے اپنوں کی ذیشان زخم کھاتا نہیں

✍ ذیشان آعظمی

No comments:

Post a Comment

Your comments are appreciated and helpful. Please give your feedback in brief.