Friday, October 6, 2017

سجدے بھی لہو روتے ہیں سجاد کے غم میں

اس واسطے بیمار پہ وہ ظلم کئے تھے
تھی دشمنی کی آگ یزیدوں کے شکم میں
عابد وہ کہاں اب ہے چو پڑھتا تھا نمازیں
سجدے بھی لہو روتے ہیں سجاد کے غم میں

✍ ذیشان آعظمی

No comments:

Post a Comment

Your comments are appreciated and helpful. Please give your feedback in brief.