Sunday, November 19, 2017

Usne kaha ke apne khuda se dua karo

Majnoo hoo meri baat ko lailaa suna karo
Anjaan ban ke mujh pe sitam na kiya karo

Maine    kaha ke dosti     mujse se to kijiye
Usne kaha    je apne    khuda se   dua karo

Meri tabeeb tum ho mere dil ka chain bhi
Bimaar      dil ka hoo,    meri dawa      karo

Khat    ka jawab dije     mujhe   intezar hai
Ek ba wafa ke     saath to thodi wafa karo

Bandish      nahi hai koi    mulaqaat ke liye
Mai muntazir ho khab me aakar mila karo

Yeh  sher o shayeri hai  mufakkir ka aaina
Zeeshan    dil ki baat hamesha   likha karo

✍ Zeeshan Azmi

گُلکاریاؔں انٹرنیشنل اُردو اَدبی فورم کے تحت 142 ویں بین الاقوامی،آن لاین،طرحئ ،فی البدیہہ مشاعرہ میں میری یکجا کاوش :

مجنوں ہوں    میری بات کو لیلی سنا کرو
انجان بن کے     مجھ پہ   ستم نہ کیا کرو

می نے کہا کہ دوستی مجھ سے تو کیجئے
اس  نے کہا   کہ اپنے    خدا سے دعا   کرو

میری طبیب  تم ہو میرے دل کا چین بھی
بیمار  دل      کا ہوں    مری کوئی دوا کرو

خط کا      جواب دیجے   مجھے انتظار ہے
اک با وفا کے     ساتھ تو    تھوڑی وفا کرو

بندش نہیں ہے      کوئی ملاقات     کی لئے
میں منتظر ہوں     خاب میں   آکر ملا کرو

یہ       شعر و شاعری      ہے مفکر   کا آئینہ
ذیشان دل     کی بات     ہمیشہ    لکھا کرو

✍ ذیشان آعظمی

No comments:

Post a Comment

Your comments are appreciated and helpful. Please give your feedback in brief.