Tuesday, November 21, 2017

Yaha momin ko duniya wale deewana samajhte hain

Musalmano ko ghafil kab kaha apna samajhte hain
Yaha momin ko duniya wale deewana samajhte hain

Khuda ke deen ko badnaam jo karta hai mimber se
Sabhi aaqil usey aalim nahi mulla samajhte hain

Mujhe aadat nahi hai be mahal bakwaas ki
Galat fahmi hai logo ki ke wo gongaa samajhte hain

Zamane me jo majma inquilaabi jazba rakhta hai
Sayasat karne wale sab unhe murda samajhte hain

Samajh sureh munafiq ki khuda ne de diya hum ko
Munafiq sach kahe to bhi usey jhoota samajhte hain

Muhammad ki shariyat me jo ghair ullah ke aage
Sabhi jahil hain jo ta'zeemi sajda samajhte hain

Mujhe afsos hai Zeeshan duniya ki zahanat pae
Samajh jinko nahi hoti usey achcha samajhte hain

✍ Zeeshan Azmi

دیا عالمی آن لائن فی البدیہہ طرحی مشاعرہ میں میری کاوش:

مسلمانوں کو غافل    کب کہاں    اپنا سمجھتے ہیں
یہاں مومن      کو دنیا والے     دیوانہ سمجھتے ہیں

خدا کے دین       کو بدنام      جو کرتا ہے   ممبر سے
سبھی عاقل     اسے عالم     نہیں ملاّ سمجھتے ہیں

مجھے   عادت نہیں    ہے بے محل  بکواس کرنے کی
غلط فہمی ہے لوگوں کی کہ وہ گونگا سمجھتے ہیں

زمانے میں     جو   مجمع   انقلابی  جذبہ رکھتا ہے
سیاست کرنے والے سب   انھیں مردہ سمجھتے ہیں

سمجھ   سورہ منافق   کی خدا نے    دے دیا ہم کو
منافق سچ کہے    تو بھی اسے جھوٹا سمجھتے ہیں

محمد   کی    شریعت     میں   جو  غیر اللہ کے آگے
سبھی جاہل ہیں جو تعظیم کا سجدہ سمجھتے ہیں

مجھے    افسوس    ہے    ذیشان دنیا کی  ذہانت پر
سمجھ جن کو نہیں ہوتی   اسے اچھا سمجھتے ہیں

✍ ذیشان آعظمی

No comments:

Post a Comment

Your comments are appreciated and helpful. Please give your feedback in brief.